چاند کے سفرمیں کھینچی گئی کرہ ارض کی تاریخی تصویرکو 50 برس گزرگئے

Hamza Ali
0

 پیساڈینا، کیلیفورنیا: چاند کے سفر کے دوران زمین کی اتاری گئی شاندار اور تاریخی تصویر کو اب پورے 50 برس ہوچکے ہیں۔ اس تصویر کو ’نیلے سنگِ مرمر‘ (دی بلو ماربل) کا نام دیا گیا ہے۔

پیساڈینا، کیلیفورنیا: چاند کے سفر کے دوران زمین کی اتاری گئی شاندار اور تاریخی تصویر کو اب پورے 50 برس ہوچکے ہیں۔ اس تصویر کو ’نیلے سنگِ مرمر‘ (دی بلو ماربل) کا نام دیا گیا ہے۔  دسمبر 1972 میں اپالو 17 کے خلانوردوں نے اپنے سفر کے دوران کرہِ ارض کی ایک شاندار تصویر کھینچی تھی جس میں افریقہ اور قطبِ جنوبی کو واضح طور پر دیکھا جاسکتا ہے جس پر بادل بھی دیکھے جاسکتے ہیں۔ یہ تصویر ناسا کے خلانوردوں، یوگین جین کرنن، رونالڈ ایونز اور ہیریسن شمٹ نے سات دسمبر کو ہیسل بینڈ کیمرے اور زیئس لینس سے کھینچی تھی۔ یہ تصویر 45000 کلومیٹر کے فاصلے پر اس وقت لی گئی تھی جب وہ چاند کی جانب رواں دواں تھے۔  50 سال پرانی یہ تصویر آج بھی کرہِ ارض کی خلا سے لی گئی بہترین تصاویر میں سے ایک ہے۔ اس میں خوبصورت نیلی زمین کے پس منظر میں تاریک سیاہ خلا کو دیکھا جاسکتا ہے۔ ناسا کے مؤرخ اسٹیفن گربر نے کہا کہ اپالو 17 کے خلانوردوں کا باضابطہ زمین کی تصویر لینے کا ارادہ نہیں تھا۔ لیکن تمام خلانوردوں کو فوٹوگرافی کی تربیت دی گئی تھی۔ 50 برس کے دوران یہ تصویر دنیا بھر میں زمین کو دکھانے کے لیے سب سے زیادہ استعمال کی گئی ہے۔

دسمبر 1972 میں اپالو 17 کے خلانوردوں نے اپنے سفر کے دوران کرہِ ارض کی ایک شاندار تصویر کھینچی تھی جس میں افریقہ اور قطبِ جنوبی کو واضح طور پر دیکھا جاسکتا ہے جس پر بادل بھی دیکھے جاسکتے ہیں۔ یہ تصویر ناسا کے خلانوردوں، یوگین جین کرنن، رونالڈ ایونز اور ہیریسن شمٹ نے سات دسمبر کو ہیسل بینڈ کیمرے اور زیئس لینس سے کھینچی تھی۔ یہ تصویر 45000 کلومیٹر کے فاصلے پر اس وقت لی گئی تھی جب وہ چاند کی جانب رواں دواں تھے۔

50 سال پرانی یہ تصویر آج بھی کرہِ ارض کی خلا سے لی گئی بہترین تصاویر میں سے ایک ہے۔ اس میں خوبصورت نیلی زمین کے پس منظر میں تاریک سیاہ خلا کو دیکھا جاسکتا ہے۔ ناسا کے مؤرخ اسٹیفن گربر نے کہا کہ اپالو 17 کے خلانوردوں کا باضابطہ زمین کی تصویر لینے کا ارادہ نہیں تھا۔ لیکن تمام خلانوردوں کو فوٹوگرافی کی تربیت دی گئی تھی۔

50 برس کے دوران یہ تصویر دنیا بھر میں زمین کو دکھانے کے لیے سب سے زیادہ استعمال کی گئی ہے۔

Tags

Post a Comment

0Comments
Post a Comment (0)