11 برسوں میں 16 لاکھ بھارتیوں نے شہریت ترک کی

Hamza Ali
0

 نئی دلی: گیارہ برسوں میں 16 لاکھ بھارتیوں نے شہریت ترک کی۔

نئی دلی: گیارہ برسوں میں 16 لاکھ بھارتیوں نے شہریت ترک کی۔  بھارتی وزارت خارجہ کے مطابق صرف اس سال 31 اکتوبر تک ایک لاکھ 83 ہزار افراد اپنی شہریت ترک کر چکے ہیں۔ جب کہ سن 2011 سے اب تک 16 لاکھ سے زائد بھارتیوں نے اپنی شہریت ترک کی ہے۔  مقامی میڈیا کے مطابق بھارت کے نائب وزیر خارجہ وی مرلی دھرن نے جمعہ کے روز پارلیمان کو بتایا کہ گزشتہ دو برسوں کے دوران بھارتی شہریوں کی جانب سے شہریت ترک کرنے کی تعداد میں خاصا اضافہ ہوا ہے۔ مرلی دھرن نے دستیاب سرکاری اعدادو شمار کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ سن 2021 میں 163370 اور سن 2022 میں 31 اکتوبر تک 183741 افراد نے بھارتی شہریت ترک کی۔انہوں نے مزید بتایا کہ سن 2011 سے اب تک مجموعی طورپر 16 لاکھ سے زائد بھارتی اپنی شہریت ترک کر چکے ہیں۔  مرلی دھرن اپوزیشن کانگریس کے رہنما عبدالخالق کے ایک سوال کا جواب دے رہے تھے، جنہوں نے2015 سے اب تک بھارتیوں کے شہریت ترک کرنے کی تعداد پوچھی تھی۔  نائب وزیر خارجہ مرلی دھرن نے بتایا کہ 2015 میں 131,489، 2016 میں 141603،2017 میں 133049، 2018 میں 134561، 2019 میں 85256 افراد نے بھارتی شہریت ترک کی، اس سے قبل 2011 میں 122819، 2012 میں 120923، 2013 میں 131405 اور 2014 میں 129328 افراد نے بھارتی شہریت ترک کی۔  بھارتی وزیر سے یہ بھی پوچھا گیا تھا کہ جن لوگوں نے اپنی شہریت ترک کی وہ اپنے ساتھ کتنی دولت لے گئے تاہم مرلی دھرن کا کہنا تھا کہ بھارتی وزارت خارجہ کے پاس اس حوالے سے کوئی اعداد و شمار دستیاب نہیں ہے۔  انہوں نے اعداد و شمار کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا کہ سن 2015 میں 93، 2016 میں 153، 2017 میں 175، 2018 میں 129، 2019 میں 113، 2020 میں 27، 2021 میں 42 اور 2022 میں 60 افراد نے بھارتی شہریت اختیار کی

بھارتی وزارت خارجہ کے مطابق صرف اس سال 31 اکتوبر تک ایک لاکھ 83 ہزار افراد اپنی شہریت ترک کر چکے ہیں۔ جب کہ سن 2011 سے اب تک 16 لاکھ سے زائد بھارتیوں نے اپنی شہریت ترک کی ہے۔

مقامی میڈیا کے مطابق بھارت کے نائب وزیر خارجہ وی مرلی دھرن نے جمعہ کے روز پارلیمان کو بتایا کہ گزشتہ دو برسوں کے دوران بھارتی شہریوں کی جانب سے شہریت ترک کرنے کی تعداد میں خاصا اضافہ ہوا ہے۔

مرلی دھرن نے دستیاب سرکاری اعدادو شمار کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ سن 2021 میں 163370 اور سن 2022 میں 31 اکتوبر تک 183741 افراد نے بھارتی شہریت ترک کی۔انہوں نے مزید بتایا کہ سن 2011 سے اب تک مجموعی طورپر 16 لاکھ سے زائد بھارتی اپنی شہریت ترک کر چکے ہیں۔

مرلی دھرن اپوزیشن کانگریس کے رہنما عبدالخالق کے ایک سوال کا جواب دے رہے تھے، جنہوں نے2015 سے اب تک بھارتیوں کے شہریت ترک کرنے کی تعداد پوچھی تھی۔

نائب وزیر خارجہ مرلی دھرن نے بتایا کہ 2015 میں 131,489، 2016 میں 141603،2017 میں 133049، 2018 میں 134561، 2019 میں 85256 افراد نے بھارتی شہریت ترک کی، اس سے قبل 2011 میں 122819، 2012 میں 120923، 2013 میں 131405 اور 2014 میں 129328 افراد نے بھارتی شہریت ترک کی۔

بھارتی وزیر سے یہ بھی پوچھا گیا تھا کہ جن لوگوں نے اپنی شہریت ترک کی وہ اپنے ساتھ کتنی دولت لے گئے تاہم مرلی دھرن کا کہنا تھا کہ بھارتی وزارت خارجہ کے پاس اس حوالے سے کوئی اعداد و شمار دستیاب نہیں ہے۔

انہوں نے اعداد و شمار کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا کہ سن 2015 میں 93، 2016 میں 153، 2017 میں 175، 2018 میں 129، 2019 میں 113، 2020 میں 27، 2021 میں 42 اور 2022 میں 60 افراد نے بھارتی شہریت اختیار کی

Post a Comment

0Comments
Post a Comment (0)